آسان سائنس – کڑی 3 – سائنٹفک میتھڈ کا بنیادی جائزہ

 سائنٹفک میتھڈ سائنسی سوالات پوچھنے اور انکا جواب تلاش کرنے کا طریقہ کار ہے اور یہ مشاہدات اور تجربات پر مبنی ہوتا ہے. سائنسی طریقہ کار کے مندرجہ ذیل اقدام ہیں :

       

سوال کیجئے
پس منظر پر تحقیق کیجئے
مفروضہ قائم کیجیے
مفروضے کو تجربات کر کے پرکھئے
تجربات سے حاصل ہونے والے اعداد و شمار کا جائزہ لیجیے
اپنے نتائج کو دوسروں تک پہنچائے  تاکہ  انکو مزید پرکھا جا سکے

سائنٹفک میتھڈ - ایک تصویری خاکہ

سائنٹفک میتھڈ – ایک تصویری خاکہ

 سائنٹفک  میتھڈ تجربہ کرنے کا ایک عمل ہے جسکو مشاہدات کو کھوجنے اور جوابات تلاش کرنے کے لئے استمال کیا جاتا ہے. سائنسدان اسکو قدرت کے عوامل میں وجوہات اور اثرات کا تعلق جاننے کے لئے استمال کرتے ہیں. دوسرے الفاظ میں، وہ  ایسے تجربات کرتے ہیں جن سے وہ جان سکیں کے اگر ایک شے میں کوئی تبدیلی لائی جائے، تو اسکا دوسری شے پر کسی طرح، کیسا اور کس وقت اثر ہوتا ہے. اکثر اوقات وہ اپنے مفروضوں کو پرکھنے کے لئے تجربات کر کے دیکھتے ہیں کہ کیا ایک شے میں ایک خاص تبدیلی لانے سے، دوسری شے پر وہی اثر ہو رہا ہے جیسا کے انھوں نے فرض کیا تھا ؟ 

  سوال کیجئے

جب آپ کسی شے کا مشاہدہ کر کے کوئی سوال کرتے ہیں تو سائنٹفک میتھڈ کا آغاز یہیں سے ہو جاتا ہے. کیسے، کیا، کب، کون، کونسا ، کیوں اور کہاں - اس طرح کے تمام سائنسی سوالات کے جوابات تلاش کرنے کا حل سائنسی طریقہ کر اپنانے میں ہے. مگر خیال رہے، سائنٹفک میتھڈ آپکو صرف ان سوالات کے جواب تلاش کرنے میں مدد دے سکتا ہے، جو ایسی چیزوں کے بارےمیں ہوں جنکو ناپا، ٹولہ جا سکے، یا جن کااعداد و شمار سے  حساب کتاب کیا جا سکے.

پس منظر پر تحقیق کیجئے  

جب آپ اپنے سوالات کا جواب تلاش کرنے کا ایک پلان بنا رہے ہوں، تو یاد رکھیے یہ دوبارہ ایجاد کرنے کی ضرورت نہیں ہے. آپ باقی لوگوں کا کیا گیا ماضی کا کام استمال کر سکتے ہیں اور اس سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں.  ایک تیز فہم سائنسدان کی طرح آپکو لائبریری، کتب، سائنسی جرائد، ڈاکومنٹریز اور انٹرنیٹ پر تحقیقی مواد کا استمال کرنا چاہیے .اس طرح آپ ماضی میں دوسرے لوگوں کی کی گئی غلطیوں سے بھی بچ سکتے ہیں اور پہلے سے کیا گیا کام دوہرانے کی ضرورت بھی نہیں پڑے گے. 

 مفروضہ قائم کیجیے

 مفروضہ ایک موزوں قیاس ہوتا ہے جو مکمل طور پر بے بنیاد تو نہیں ہوتا مگر اسکو ثابت کرنے کے لئے کوئی ٹھوس ثبوت بھی موجود نہیں ہوتا. عمومی طور پر سائنسی زبان میں اسکو یوں لکھا جاتا ہے :

 اگر _____ ، تو ______ ہو گا.

اگر میں یہ کروں تو یہ ہوگا.

مفروضہ  اس طرح سے بیان کیا جانا چاہیے کہ اسکو آسانی سے پرکھا جا سکے، ناپا تولا جا سکے. اسی طرح، اسکو اس طرح سے درج کیا جاتا ہے کہ وہ اصلی سوالات کا جواب دینے میں مددگار ہو.

 مفروضے کو تجربات کر کے پرکھئے

تجربات بتاتے ہیں کہ مفروضہ صحیح ہے یا غلط.   یہ ضروری ہے کہ آپکے تجربات  فیر fair  یا منصفانہ ہوں. یہ تبھی ممکن ہوتا ہے جب آپ تجربے میں استمال ہونے والے متخیر variables  میں سے کسی ایک کو تبدیل کیا جائے اور باقیوں کو جامد رکھا جائے.

اسی طرح یہ بہت اہم ہے کہ تجربے کو متعدد بار دہرایا جائے تاکہ یقین ہو جائے کے نتائج حادثاتی یا چانس پر مبنی نہیں ہیں بلکہ دہریہ تجربات سے ثابت ہے ہیں.

  تجربات سے حاصل ہونے والے اعداد و شمار کا جائزہ لیجیے

 تجربے کے مکمل ہو جانے کے بعد، پیمائش اور ناپ تول کیا جاتا ہے اور اس سے حاصل ہونے والے اعداد و شمار کا جائزہ لیا جاتا ہے تاکہ سائنسی عوامل کو گہرائی سے سمجھا جا سکے. یہ تجزیہ ہی صحیح معنوں میں بتاتا ہے کہ مفروضہ ٹھیک تھا یا غلط.

سائنسدانوں کے مفروضے اکثر تجربات اور اعداد و شمار کے تجزیے سے غلط ثابت ہوتے ہیں، اور یہی نتائج انکو مزید مفروضے قائم کرنے میں اور سائنسی تفشیش و تحقیق کو آگے بڑھانے میں مدد دیتے ہیں. مفروضہ غلط ہونے کی صورت میں اسی کی روشنی میں وہ نئے مفروضے قائم کرتے ہیں اور سائنٹفک میتھڈ پھر سے لاگو کرتے ہیں. یہ بات سائنسی دنیا میں بہت اہم ہے کہ اگر ایک تجربے کو متعدد بار کرنے سے ایک مفروضہ ٹھیک ثابت ہو جائے، تب بھی سائنسدان اسکو مختلف نوعیت کے مزید تجربات سے پرکھتے ہیں تاکہ مفروضے کے صحیح ہونے کے حق میں زیادہ سے زیادہ شواہد موجود ہوں اور شک و شبہ کی کوئی گنجائش نہ رہے. یہی سائنس کی خوبصورتی ہے.

 اپنے نتائج کو دوسروں تک پہنچائے  تاکہ  انکو مزید پرکھا جا سکے

 سائنس کی دنیا میں peer review  کی بڑی اہمیت ہے. اس سے مراد یہ ہے کہ ایک سائنسدان یا گروپ کے سائنسی نتائج کو کوئی اور سائنسدان، گروپ، طلبہ سائنس یا کوئی سائنسی ادارہ پرکھے. پیشہ ور سائنسدان اپنے سائنسی نتائج کو ایک رپورٹ کی شکل میں سائنسی جرائد، سائنسی رسائل یا کانفرنسوں وغیرہ میں پیش کرتے ہیں.

 آسان سائنس′ سلسلے کی تمام تحاریر پڑھنے کے لئے یہاں کلک کریں.
Related Posts with Thumbnails

موضوع : سائنس و ٹیکنولو جی

ٹیگ : , , , , , , , ,

Comments (4)

Trackback URL | اس تحریر کے تبصروں کی RSS Feed

  1. [...] This post was mentioned on Twitter by Urdublogz.com, روشنی . روشنی said: سائنٹفک میتھڈ کا بنیادی جائزہ | روشنی http://roshnipk.com/blog/?p=658 http://fb.me/L26Qjwgi [...]

    پسند یا نا پسند : Thumb up 0 Thumb down 0

  2. md says:

    بہت اچھے اور آسان طریقہ سے سائنٹفک میتھڈ کو سمجھا یا گیا ہے – بہت شُکریہ

    پسند یا نا پسند : Thumb up 1 Thumb down 0

  3. zain khan says:

    سوال ہی علم کی کنجی ہے– یہ علمانہ ارٹیکل ہے– روشنی کا شکریہ

    پسند یا نا پسند : Thumb up 1 Thumb down 0

  4. Almas Zahra says:

    مزید اقساط کا انتظار رہے گا. شکریہ

    پسند یا نا پسند : Thumb up 1 Thumb down 0

تبصرہ لکھیے




اگر آپ چاہتے ہیں کے آپکے تبصرے کے ساتھ تصویر نظر آئے تو حاصل کیجیے Gravatar.

Enable Google Transliteration.(To type in English, press Ctrl+g)